صفحہ اول / پاکستان / چیئرمین نیب کی PACاجلاس میں عدم شرکت،PACارکان شدید برہم

چیئرمین نیب کی PACاجلاس میں عدم شرکت،PACارکان شدید برہم

اسلام آباد ۔ چیئرمین رانا تنویر حسین کی زیر صدارت پارلیمنٹ کی پبلک اکاونٹس کمیٹی کا اجلاس میں چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال کی اجلاس میں عدم شرکت پر پبلک اکاونٹس کمیٹی کے ارکان نے شدید برہمی اظہار کیا ہے جبکہ پی ٹی آئی کے رکن قومی اسمبلی نور عالم خان کا کہنا تھا کہ وزیر اعظم نے منظوری دی ہوتی تو کابینہ ڈویژن کی جانب سے خط لکھا جاتا۔

ذرائع کے مطابق پارلیمنٹ کی پبلک اکاونٹس کمیٹی کا اجلاس شروع ہوا تو چیئرمین پی اے سی نے میڈیا کے نمائندوں کو اجلاس سے جانے کا کہا جس پر کمیٹی ارکان نے احتجاج کیا۔پی اے سی کے تمام ارکان نے ان کیمرا کے بجائے اجلاس اوپن رکھنے کا مطالبہ کیا۔سینیٹر شیری رحمٰن نے کہا کہ نیب کی جانب سے جو بھی بریفنگ دی جائے وہ سب کے سامنے ہونی چاہیے۔

دوسری جانب وزیر اعظم عمران خان نے قومی احتساب بیورو (نیب) کے چیئرمین جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال کوپبلک اکاونٹس کمیٹی (پی اے سی) سمیت کسی بھی پارلیمانی کمیٹی کے اجلاس میں پیش ہونے سے روک دیا ہے ۔پی اے سی نے نیب وصولیوں کی تفصیلات سے متعلق بریفنگ کے لیے چیئرمین نیب کو طلب کیا تھا ۔

تاہم چیئرمین پی اے سی اجلاس ان کیمرا رکھنے پر بضد رہے اور میڈیا کو کمیٹی روم سے نکال دیا گیا۔چیئرمین نیب جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال بریفنگ کے لیے اجلاس میں شریک نہیں ہوئے اور قومی احتساب بیورو کی جانب سے لکھا گیا خط پی اے سی اجلاس میں پیش کیا گیا۔

خط میں کہا گیا تھا کہ وزیر اعظم کی منظوری سے ڈی جی نیب کو چیئرمین کی نمائندگی کا حق دیا گیا ہے اور وہ بطور پرنسپل اکاونٹنگ افسر، چیئرمین نیب کی نمائندگی کریں گے۔

پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے رکن قومی اسمبلی سید نوید قمر نے کہا کہ بطور پرنسپل اکاونٹنگ افسر، چیئرمین نیب کی نمائندگی کوئی افسر نہیں کر سکتا۔پی اے سی ارکان نے نیب کی وصولیوں پر ڈی جی نیب سے بریفنگ لینے سے انکار کر دیا اور ارکان کے احتجاج کے باعث پی اے سی کا اجلاس ملتوی کردیا گیا۔کمیٹی نے چیئرمین نیب کا عذر مسترد کردیا اور آئندہ اجلاس میں انہیں خود پیش ہونے کی ہدایت کی۔

رانا تنویر حسین نے کہا کہ یہ اجلاس چیئرمین نیب کی خواہش پررکھا گیا تھا اور نیب کے خط کے حوالے سے سیکریٹری کابینہ ڈویژن سے تصدیق کروائی جائے گی۔واضح رہے کہ چیئرمین نیب 7 دسمبر 2021 کو پی اے سی میں پیش ہوئے تھے جہاں ان سے سیاست دانوں، بیوروکریٹس، ججوں اور عسکری حکام کے مقدمات اور ریکوری کی تفصیلات طلب کرتے ہوئے 6 جنوری کو ان کیمرا اجلاس طلب کیا گیا تھا۔

٭۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
نوٹ: قلب نیوز ڈاٹ کام ۔۔۔۔۔ کا کسی بھی خبر اورآراء سے متفق ہونا ضروری نہیں. اگر آپ بھی قلب نیوز ڈاٹ کام پر اپنا کالم، بلاگ، مضمون یا کوئی خبر شائع کر نا چاہتے ہیں تو ہمارے آفیشیل ای میل qualbnews@gmail.com پر براہ راست ای میل کر سکتے ہیں۔ انتظامیہ قلب نیوز ڈاٹ کام

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے