صفحہ اول / شہر شہر / ضلع جھنگ کی ترقی اورپسماندگی کا خاتمہ اولین ترجیح ،فیاض احمد

ضلع جھنگ کی ترقی اورپسماندگی کا خاتمہ اولین ترجیح ،فیاض احمد

جھنگ ۔ ڈپٹی کمشنر فیاض احمد موہل نے کہا ہے کہ رواں مالی سال میں ضلع جھنگ کو مختلف ترقیاتی اسکیموں کے لئے گیارہ ارب روپے کی خطیر رقم جاری کی گئی ہے اور پسماندہ ضلع جھنگ اس وقت پنجاب بھر میں سالانہ ترقیاتی پروگرام ( اے ڈی پی)میں چھٹے نمبر پر ہے۔

انہوں نے کہا کہ ضلع جھنگ کی ترقی اور پسماندگی کا خاتمہ ان کی بطور ضلعی سربراہ اولین ترجیح ہے ۔ پونے دو سو سال پُرانے ضلع جھنگ کو ماضی میں عرصہ دراز تک پسماندہ رکھا گیا یہی وجہ ہے کہ آج یہاں کے باسیوں کوبنیادی سہولیات بھی میسر نہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز پریس کلب جھنگ کے پروگرام ”میٹ دی پریس“ میں اظہار خیال کرتے ہوئے کیا ۔

انہوں نے کہا کہ ضلع جھنگ ایک عرصہ تک فرقہ واریت کی زد میں رہا لیکن اب وہ وقت آ گیا ہے کہ جھنگ ترقی کی ڈگر پر چل پڑا ہے اور آنے والے چند ماہ میں یہاں کی عوام کو ترقی کے حوالے سے واضح تبدیلی نظر آئے گی۔

جھنگ میں جاری ترقیاتی اسکیموں کے بارے میں تفصیلاََ بات کرتے ہوئے فیاض احمد موہل نے کہا کہ شورکوٹ سے جھنگ اور جھنگ سے پینسرہ تک دو رویہ سڑک کی تعمیر ایشین ڈویلپمنٹ بنک کی گرانٹ سے ایک ارب تینتالیس کروڑ روپے کی رقم سے کی جا رہی ہے۔

شہریوں کو صحت کی بہتر بنیادی سہولتوں کی فراہمی کے لئے ضلع میں متعدد منصوبوں پر کام جاری ہے. انہوں نے بتایا کہ 373کروڑ روپے کی خطیر رقم سے غلام بنی میموریل ہسپتال کی تعمیر کا منصوبہ جاری ہے جس کے لئے 70کروڑ روپے کی گرانٹ مل چکی ہے جبکہ 13کروڑ روپے کی خطیر رقم سے ڈی ایچ کیو ہسپتال کے ایمرجنسی وارڈ کی توسیع کی جا رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ ٹیچنگ ہسپتال کے لئے 500بیڈ ہونا ضروری ہیں ۔ ڈی ایچ کیو میں اس وقت 250بیڈز جبکہ غلام نبی بلاک کی تعمیر سے 150بیڈ ز اور ایمر جنسی بلاک کی توسیع سے یہ تعداد تقریباََ پوری ہو جائے گی جس کے بعد ٹیچنگ ہسپتال کا خواب بھی پورا ہو سکے گا ۔ انہوں نے کہا کہ ضلع کے سرکاری سکولوں میں سہولیات کی فراہمی اور گرلز سکولوں کی تعداد کو بوائز سکولوں کے برابر لانے کے لئے بھی ہنگامی بنیادوں پر اعتماد کئے جا رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ پنجاب ماڈل سٹی پراجیکٹ کے تحت 80کروڑ روپے کی گرانٹ سے شہر کی سڑکوںاور گلیوں کی تعمیر و مرمت اور دیگر کاموں پر خرچ کی جا رہی ہے جبکہ ایم پی اے مولانا معاویہ اعظم کی گرانٹ سے 80لاکھ روپے اور ایم این اے غلام بی بی بھروآنہ کی گرانٹ سے 40لاکھ روپے کی گرانٹ بھی شہر کی تعمیر و ترقی پر خرچ ہو رہی ہے۔

شہریوں کو صحت و تفریح کے بہتر مواقع میسر کرنے کے لئے 11کروڑ روپے کی خطیر رقم سے کچہری چوک کے قریب واقع سوئمنگ پول کی جگہ نیا سٹیٹ آف آرٹ سوئمنگ پول تعمیر کیا جا رہا ہے ، سیٹلائٹ ٹاﺅن میں کلمہ چوک کے قریب سٹیٹ آف دی آرٹ آڈیٹوریم تعمیر کیا جا رہا ہے جبکہ چینیوٹ روڑ پر واقع چناب پارک کو بھی جدید طرز پر اپ گریڈ کیا جا رہا ہے اور وہاں دیگر سہولیات کے ساتھ ساتھ دبئی طرز کا واکنگ ٹریک بنایا جا رہا ہے۔

انہوں نے بتایا کہ سرگودھا روڑ پر ریواز برج کے قریب جدید طرز کا پکنک پوائنٹ بنایا جا رہا ہے جبکہ شہر میں موجود دیگر تفریحی پارکس کو بھی جدید سہولیات سے آراستہ کیا جا رہا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ شہید روڑ پر واقع ذیل گھر میں جدید طرز کا شاپنگ پلازہ تعمیر کیا جا رہا ہے ۔

فیاض احمد موہل نے مزید بتایا کہ سیوریج شہر کا سب سے بڑا مسئلہ ہے جس میں بہتری کے بغیر دیگر تمام ترقیاتی کام بے سود ہوں گے۔ انہوں نے بتایا کہ سیوریج کے ماسٹر پلان کے تخمینے کو کم کر کے پانچ ارب تک لایا گیا ہے اور عنقریب وزیر اعلیٰ پنجاب اپنے دورہ جھنگ کے موقع پر اس منصوبے کے لئے گرانٹ کی فراہمی کا اعلان کریں گے۔

انہون نے بتایا کہ شہر میں صفائی کے نظام کو بہتر بنانے ، کوڑا کرکٹ کو ٹھکانے لگانے اور سیوریج کے پانی کی نکاسی کے لئے 27کروڑ روپے کی خطیر رقم سے جدید مشینری خریدی جا رہی ہے ۔ ا س موقع پر ڈپٹی کمشنر نے صحافیوں کے مختلف سوالات کے جوابات بھی دیئے۔

٭۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
نوٹ: قلب نیوز ڈاٹ کام ۔۔۔۔۔ کا کسی بھی خبر اورآراء سے متفق ہونا ضروری نہیں. اگر آپ بھی قلب نیوز ڈاٹ کام پر اپنا کالم، بلاگ، مضمون یا کوئی خبر شائع کر نا چاہتے ہیں تو ہمارے آفیشیل ای میل qualbnews@gmail.com پر براہ راست ای میل کر سکتے ہیں۔ انتظامیہ قلب نیوز ڈاٹ کام

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے