صفحہ اول / پاکستان / سپریم کورٹ،سندھ لوکل گورنمنٹ ایکٹ کی شق 74 اور 75 کالعدم قرار

سپریم کورٹ،سندھ لوکل گورنمنٹ ایکٹ کی شق 74 اور 75 کالعدم قرار

اسلام آباد . سپریم کورٹ نے سندھ کے بلدیاتی اختیارات کیس میں ایم کیو ایم پاکستان کی درخواست نمٹا دی۔ عدالت نے سندھ لوکل گورنمنٹ ایکٹ کی شق 74 اور 75 کالعدم قرار دیتے ہوئے قرار دیا ہے کہ سندھ حکومت تمام قوانین کی آرٹیکل 140 اے سے ہم آہنگی کو یقینی بنائے۔

چیف جسٹس گلزار احمد کی سربراہی میں بنچ نے 26 اکتوبر 2020 کو فیصلہ محفوظ کیا تھا۔ فیصلے میں کہا گیا کہ ماسٹر پلان بنانا اور اس پر عملدرآمد بلدیاتی حکومتوں کے اختیارات ہیں، بلدیاتی حکومت کے تحت آنے والا کوئی نیا منصوبہ صوبائی حکومت شروع نہیں کر سکتی ہے، سندھ حکومت مقامی حکومتوں کیساتھ اچھا ورکنگ ریلیشن رکھنے کی پابند ہے۔

عدالت نے سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی ایکٹ، کے ڈی اے قوانین، ملیر، حیدرآباد، لیاری، سیہون اور لاڑکانہ ڈویلپمنٹ اتھارٹیز کے قوانین بھی آئین کے مطابق تبدیل کرنے کا حکم دیتے ہوئے ہدایت کی کہ ان شقوں میں تبدیلی کی جائے، جہاں صوبائی اور مقامی حکومتوں کے اختیارات میں تضاد ہے، صوبائی فنانس کمیشن پر عملدرآمد کیا جائے۔

٭۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
نوٹ: قلب نیوز ڈاٹ کام ۔۔۔۔۔ کا کسی بھی خبر اورآراء سے متفق ہونا ضروری نہیں. اگر آپ بھی قلب نیوز ڈاٹ کام پر اپنا کالم، بلاگ، مضمون یا کوئی خبر شائع کر نا چاہتے ہیں تو ہمارے آفیشیل ای میل qualbnews@gmail.com پر براہ راست ای میل کر سکتے ہیں۔ انتظامیہ قلب نیوز ڈاٹ کام

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے